ایک ویب یا انٹرنیٹ سٹور کیسے کام کرتا ہے؟ How to Establish a Web Store

web store nomadthoughtsofeast

web store nomadthoughtsofeast

ایک ویب سٹور یا انٹرنیٹ سٹور انٹرنیٹ کے ذریعے سے مال کی آن لائن خرید و فروخت کا عمل ہے۔ ویب سٹور دراصل ایک ویب سائٹ ہوتی ہے جس پر ای کامرس کے اصولوں کے مطابق ایسا کاروباری نظام وضع کیا جاتا  ہے کہ گاہک اس ویب سائٹ یا پھر ویب سٹور پر موجود اشیاء کا اپنی کمپیوٹنگ ڈیوائسز جیسا کہ کمپیوٹر، لیپ ٹاپس اور موبائل وغیرہ کے ذریعے سے جائزہ لیتا ہے اور اگر اسے وہ پروڈکٹ پسند آ جائے تو گاہک ان پروڈکٹس یا اشیاء کا آن لائن آرڈر کر دیتا ہے۔

اگر ہم اپنا ایک ویب سٹور بنانا چاہتے ہیں تو اس کے لئے ہمیں بنیادی طور پر کن بنیادی باتوں کو مد نظر رکھنا چاہئے آئیے ان باتوں کا جائزہ لیتے ہیں۔ توسب سے پہلے ہمیں ایک ای کامرس ویب سائٹ کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس طرح کی ای کامرس ویب سائٹ کے حصول کے لئے ہمیں سب سے پہلے ویب ہوسٹنگ کی سروسز لینی ہوتی ہیں۔ ان سروسز کے ذریعے سے ہم اپنے ویب سٹور کے لئے آن لائن سپیس خریدتے ہیں اور اس مقصد کے لئے ماہانہ یا سالانہ سبسکرپشن کے حساب سے ادائیگی ہوتی ہے۔ ہاسٹنگ کی سبسکرپشن کی سالانہ لاگت 10ہزار کے لگ بھگ ہوتی ہے۔

ہمیں اپنے ویب سٹور کا ایک ڈومین نیم یا انٹرنیٹ نام خریدنا ہوتا ہے جس کی مالیت ایک سے تین ہزار سالانہ تک بھی ہو سکتی ہے۔ اب اکلا مرحلہ ویب سٹور کی تیاری کا ہے۔ اس مقصد کے لیے بہت سے کانٹنٹ مینیجمنٹ سسٹم سافٹ وئیر مارکیٹ میں موجود ہیں جن میں سے کچھ بالکل مفت ہیں اور کچھ کے لئے مناسب سی ادائیگی کرنا ہوتی ہے۔ مفت میں موجود کانٹینٹ مینیجمنٹ سسٹم یا سی ایم ایس میں ورڈ پریس سرفہرست ہے۔ جبکہ پیڈ سبسکرپشن میں شوپی فائی اور مے جاینٹو بڑے نام ہیں۔ اس کے علاوہ ایمازوں بھی ایک بہت ہی مقبول ای کامرس پلیٹ فارم ہیں تاہم اس میں کام کرنے کے حوالے سے پاکستانیوں کو کچھ مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

کانٹینٹ مینیجمنٹ سسٹم کی مدد سے آپ باآسانی اپنی پروڈکٹس کو اپنے ویب سٹور پر بیچنے کے لئے آویزاں کر سکتے ہیں ناصرف  یہ بالکہ اس سسٹم کے ذریعے سے آپ اپنی پروڈکٹس کی ڈیسکریپشن یا تعارف سے لے کر ان کی قیمتوں  اور ان کی تصاویر وغیرہ کو آویزاں کرنے کے ساتھ ساتھ ایسا پروسیس یا طریقہ کار وضع کر سکتے ہیں کہ کسٹمر ویب سٹور ہی کے ذریعے سے آن لائن اپنا آرڈر بک کروادے۔ اس مقصد کے لئے یا تو وہ آن لائن اپنے بینکنگ کارڈ وغیرہ کے زریعے سے ادائیگی کر سکے گا یا پھر کیش آن ڈیلوری یعنی کورئیر کے ذریعے اشیاء کی کاہگ کو پہنچ کے وقت کورئیر ہی کے ذریعے سے ادائیگی ممکن ہو گی۔

اس کے علاوہ کسٹمرز آن لائن پروڈکس پر اپنا ریویو بھی دے سکتے ہیں اور پروڈکٹس کا لنک وغیرہ آگے سوشل میڈیا پر شئیر بھی کر سکتے ہیں۔  پاکستان میں دراز بھی آن لائن سٹور بنانے میں پہت مدد گار ہو سکتا ہے جس کا جائزہ ہم اپنے آگے کسی کالم میں لیں گے۔ اس کے علاوہ آج کل ای کامرس میں ڈراپ شپنگ کا کانسیپٹ بہت مقبول ہے اور اس سلسلے میں علی بابا  وغیرہ کا کیا کردار ہے؟ اس بارے میں بھی کسی دوسرے کالم میں بات کریں گے۔

Author

  • Freelance Accountant, Full Charge Bookkeeper, Financial Analyst, and Ex Banker with 15 Years of Professional Experience. Also a Blogger...

Related Post