ہندوستان میں 2021 کی اب تک کی سب سے بڑی خبر، برڈ فلو پھیل گیا، پاکستان میں بھی اثرات کا خدشہ Bird Flu 2021 in India; Pakistan Could Potentially Hurt

Bird Flu India

Bird Flu India

ہندوستان کے لیے 2021 کی سب سے بڑی خبر یہ ہے کہ ہندوستان کے طول و عرض میں برڈ فلو کی وبا پھیل چکی ہے۔  لاتعداد پرندے مختلف شہروں میں اس برڈ فلو کی وجہ سے اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔ اور انسانوں میں بھی اس وبا کے پھیلنے کا شدید ترین اندیشہ پیدا ہو چکا ہے۔ تازہ ترین خبر یہ ہے کہ ہندوستان کے دارالحکومت دہلی میں دو سو کے قریب کوے مارے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ کیرل اور دوسرے علاقوں میں بھی ہزاروں کی تعداد میں کووں اور دیگر پرندوں کی ہلاکتوں کی اطلاعات ہیں۔

ہندوستان کے علاقوں ہماچل پردیش، راجستھان، مدھیہ پردیش، کیرل، اور ہریانہ میں برڈ فلو سے متعلق بہت سے واقعات سامنے آئے ہیں اور ان میں بہت سے پرندوں کی ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ متاثر ہونے والے پرندوں میں ابھی تک کووں، کوئل، اور بطخوں وغیرہ میں برڈفلو کے زیادہ تر کیسز سامنے آئے ہیں۔ ہماچل پردیش کی ایک جھیل میں 18 سو غیر ملکی پرندے مردہ حالت میں پائے گئے ہیں۔ اور اسی کے پیش نظر ہندوستان کے طول و عرض میں برڈ فلو کا الرٹ جاری کر دیا گیا ہے۔

برڈ فلو دراصل انفلوئنزا قسم کی بیماری ہے۔ اس وائرس کی وجہ سے پولٹری میں پرورش پانے والے پرندے جیسا کہ چکن وغیرہ شدیدترین متاثر ہوتے ہیں۔ برڈ فلو کئی طرح سے ہو سکتا ہے جن میں سے کچھ اقسام بہت ہی خطرناک اور جان لیوا ثابت ہو سکتی ہیں۔ پرندوں کے علاوہ دوسرے پالتو جانوروں میں بھی برڈ فلو آ سکتا ہے۔ برڈ فلو کی علامات جو کہ پرندوں میں ظاہر ہوتی ہیں وہ ان کی آنکھوں سے واضح ہوتی ہیں۔ جبکہ انسانوں میں سانس لینے میں دشواری برڈ فلو کی بڑی علامات میں سے ہے۔

اگرچہ پاکستان میں ابھی تک سرکاری طور پر برڈ فلو سے متاثر پرندوں کا کوئی بھی کے سامنے نہیں آیا تاہم کیونکہ پرندوں کی کوئی سرحد نہیں ہوتی چنانچہ اس بات کا بہت بڑا امکان ہے کہ ہمسایہ ملک بھارت میں پھیلنے والی برڈ فلو کی بیماری کے اثرات زیادہ دیر تک پاکستان سے دور نہیں رہ سکتے۔ اس لیے پاکستان میں بہت سے لوگوں نے ابھی سے احتیاطی تدابیر شروع کر دی ہے اور ایسے گوشت کا استعمال کافی حد تک کم کر دیا ہے جو کہ پرندوں سے حاصل کیا گیا ہو۔ اس وجہ سے پولٹری گوشت کی قیمتیں بھی تیزی سے نیچے آنا شروع ہوگئی ہیں اور پولٹری صنعت ہیجان کا شکار ہوتی نظر آ رہی ہے۔ 

Author

  • Freelance Accountant, Full Charge Bookkeeper, Financial Analyst, and Ex Banker with 15 Years of Professional Experience. Also a Blogger...

Related Post