کاروبار میں مقاصد کا تعین اور کاروباری منصوبہ بندی کیوں اہمیت رکھتی ہے؟ Why Goal Setting and Business Planning Worth to Learn

Goal Setting and Business Plan

Goal Setting and Business Plan

زندگی میں منصوبہ سازی کی اہمیت سے انکار ممکن نہیں۔ ہم روز مرہ زندگی میں بہت سے چھوٹے بڑے پلان یا منصوبے ترتیب دیتے ہیں۔ اسی طرح سے کاروباری زندگی تو نام ہی منصوبہ بندی اور پلاننگ کا ہے۔ یہ کاروباری منصوبہ جات یا بزنس پلان ہمیں اس جانب رہنمائی کرتے ہیں کہ ہم کاروبار کے سلسلے میں کیسے اپنے مقاصد کا تعین کریں اور کیسے ان مقاصد کو حاصل کریں۔ مقاصد کے تعین کے ساتھ ساتھ ان مقاصد یا گولز کو حاصل کرنے کی منصوبہ بندی ہی بزنس پلاننگ اینڈ مینجمنٹ ہے۔جب بھی ہم اپنے کاروباری مقاصد کا تعین کرنے لگتے ہیں تو ہمیں سب سے پہلے یہ غور کرنا چاہیے کہ ہمارا سب سے پہلا اور بنیادی گول یا مقصد کیا ہے، یعنی ہمارے کاروبار کی اصل روح یا مشن کیا ہے۔ دراصل کسی بھی کاروبار کی اصل روح یا مشن تو یہ ہے کہ ایسے لیگل اور قانونی دائرے کے اندر رہتے ہوئے اپنی کاروباری سرگرمیاں انجام دے کہ اپنی انویسٹمنٹ کے بدلے میں مناسب اور جائز کاروباری منافع بنائے۔ اب اس مشن کو حاصل کرنے کے لئے دیگر مقاصد کا تعین کیا جاتا ہے۔ مقاصد کا تعین کرنے کے لئے اس بات کو مدنظر رکھنا چاہیے کہ وہ مقاصد ایسے ہوں جو کہ ہم حاصل کر سکیں۔ یہ مقاصد کاروبار کے ہر ڈیپارٹمنٹ سے متعلق ہو سکتے ہیں جن میں فنانشل گولز، ہیومن ریسورس گولز، پروڈکشن اینڈ آپریشنل گولز، مارکیٹنگ گولز وغیرہ شامل ہیں۔اس کے ساتھ ساتھ وہ مقاصد ہم خاص وقت مقرر کے دوران حاصل کرنے کے قابل ہوں۔ یہ مقاصد یا گولز حاصل کرنے کے لئے ہم بزنس پلان ترتیب دیتے ہیں۔ اس بزنس پلاننگ کے دوران ہم طویل مدتی تزویراتی منصوبہ جات اور اس کے ساتھ ساتھ شارٹ ٹرم منصوبہ جات یا ٹیکٹکس کو ترتیب دیتے ہیں۔ تزویراتی منصوبہ جات عموما ایک سال یا اس سے زیادہ طویل مدت کے منصوبے ہوتے ہیں۔ جبکہ ٹیکٹکس وہ شارٹ ٹرم پلانز ہوتے ہیں جو کہ بڑی اسٹریٹجیز کو حاصل کرنے کے لئے ہم روزمرہ کے معمول میں اختیار کرتے ہیں۔کسی بھی کاروبار کی کامیابی کیلئے مقاصد کا تعین اور اس کے ساتھ ساتھ تزویراتی اور شارٹ منصوبہ بندی کلیدی کردار ادا کرتے ہیں۔ تاہم کامیابی کا انحصار انسان کے اختیار میں نہیں جبکہ کوشش ہمارے اختیار میں ہے۔ اور ہمیں درست سمت میں کوشش کرنی چاہیے۔ تاہم یہ اللہ تعالی کی مرضی ہے کہ ہمیں کب اور کتنی کامیابیاں عطا کرے۔مالی دا کم پانی لانا مشکاں بھربھر لاوےقدرت دا کم پھل بوٹے لانا، لاوے یا نا لاوے 

Author

  • Freelance Accountant, Full Charge Bookkeeper, Financial Analyst, and Ex Banker with 15 Years of Professional Experience. Also a Blogger...

Related Post